Sunday, April 14, 2024, 3:25 AM
**توشہ خانہ ریفرنس میں عمران خان اور بشریٰ بی بی کو 14، 14 سال قید کی سزا **دونوں ملزمان دس سال کے لئے عوامی عہدہ رکھنے کے لئے نااہل قرار **احتساب عدالت نے مجرمان پر 1 ارب 57کروڑ روپے جرمانہ بھی عائد کیا **عدالت نے عمران خان کا 342 کا بیان ریکارڈ کئے بنا ہی فیصلہ سنادیا **احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے فیصلہ سنایا
بریکنگ نیوز
Home اہم ترین نواز شریف کا اسٹیبلشمنٹ کیساتھ ٹکراؤ کی پالیسی سے گریز کا فیصلہ

نواز شریف کا اسٹیبلشمنٹ کیساتھ ٹکراؤ کی پالیسی سے گریز کا فیصلہ

نواز شریف نے 2017 کے کرداروں کے احتساب کا معاملہ اللہ پر چھوڑ دیا : اسحاق ڈار

by NWMNewsDesk
0 comment

لندن میں ن لیگ کے قائد نواز شریف کی زیرصدارت اہم بیٹھک ہوئی، اجلاس میں پارٹی کے بیانیے کوحتمی شکل دے دی گئی ہے۔

لندن میں مقیم مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف نے فیصلہ کیا ہے کہ کسی سے بدلہ نہیں لینانہ ہی انتقام کی سیاست کرنی ہے۔ اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ ٹکراؤ کی پالیسی سے بھی گریز کیا جائے گا۔

اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ آج جو حالات ہیں وہ سب انتقامی سیاست کا ہی نتیجہ ہے،لہٰذا اب مفاہمت ہوگی اور پاکستان کے بڑے مسائل حل کرنے کیلئے مل کر چلا جائےگا۔

میٹنگز میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ پارٹی مستقبل میں معاشی ایجنڈے پر فوکس کرے گی، ن لیگ کی پہلی ترجیح پاکستان کو معاشی گرداب سے نکالنا ہوگا۔

banner

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ نواز شریف انتقام کے بجائے ملک کو ٹھیک کرنے پر توجہ دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی کا بیانیہ نواز شریف نے طے کیا، ایک ہی کام ہوسکتا ہے، ملک کو ٹھیک کریں یا انتقام لینے میں لگ جائیں۔

اسحاق ڈارکا کہنا تھا کہ نواز شریف نے 2017 کے کرداروں کے احتساب کا معاملہ اللہ پر چھوڑ دیا تھا، نواز شریف پر ظلم کرنے والے رسوا ہوئے، کم عرصے میں سب کردار بے نقاب ہوئے۔

مزید پڑھیے

مضامین

بلاگز

کوئک لنکز

رازداری کی پالیسی
رائے
رابطہ کریں
اشتہارات

سائنس و ٹیکنالوجیگوگل سرچ میں صارفین کے تحفظ کے لیے 3 بہترین پرائیویسی فیچرز کا اضافہگوگل سرچ میں صارفین کے تحفظ کے لیے 3 بہترین پرائیویسی فیچرز کا اضافہ
دم توڑتے ستارے کی دنگ کر دینے والی تصاویر
واٹس ایپ کا نیا فیچر جو اس کی ایک بڑی خامی دور کر دے گا
کچھ عرصے سے گوگل اکاؤنٹ استعمال نہیں کیا؟ تو وہ اس تاریخ کو ڈیلیٹ ہو جائے گا

 جملہ حقوق محفوظ ہیں   News World Media. © 2023